امتحانات کےلیے مقرر کیے گئے وقواعد و ضروریات

امتحانی مراکز کھولنے کے لیے ضوابط:

• طلبہ کی تعداد تین یا اس سے زیادہ ہو، اور ایک ہی ملک میں طلبہ کو ایک سے زیادہ شہروں میں تقسیم کیا جائے گا، اور جو شہر ان کو سب سے زیادہ قریب ہو وہاں امتحانی مرکز کھولاجائے گا۔

• تین سے کم طلبہ کی صورت میں جہاں طلبہ موجود ہیں وہاں ایک خصوصی امتحانی مرکز بنایا جائے گا لیکن امتحانات کے دنوں میں امتحانی مرکزکے تمام اخراجات وہ خود برادشت کریں گے اور یہ امتحانی مرکز امتحان سے دوماہ قبل یونیورسٹی سے معاہدے کے بعد قائم کیا جائے گا۔

اسی طرح خصوصی امتحانی مرکز کے لیے یہ شرط بھی ہے کہ طلبہ کے رہنے کی جگہ سے 100 کیلومیٹر کے فاصلے پر جامعہ کی طرف سے قائم شدہ کوئی امتحانی مرکز نہ ہو۔

• یونیورسٹی کو اس بات کی یقین دھانی کروائی جائے گا اس شہر یا جگہ میں مستقل طلبہ موجود ہیں۔

• اگر طلبہ کی تعداد تین سے کم ہے تو قریبی امتحانی مرکز سے رجوع کرے خواہ وہ مرکز اسی ملک میں ہو یا قریبی ملک میں۔

• امتحانی مرکز میں رجسٹرڈ کیے گئے طلبہ کی تعداد معتبر ہو گی نہ کہ حاضر ہونے والے طلبہ کی۔

امتحانی مراکز میں ضروری طورپر مہیا کی جانے والی اشیاء:

امتحان کے لیے آنے والے طلبہ کی تعداد کے اعتبار سے کمپیوٹرز اور احتیاطی اشیاء کی فراہمی، انتہائی ضرورت کے وقت امتحان اوراق پر ہو سکتا ہے علاوہ ازیں نہیں، اور امتحانی مرکز اس کے لیے تیار رہے۔

کمپیوٹر پر عربی، اردو، اور انگریزی کی بورڈ کی سہولت موجود ہو۔

کم ازکم 4 ایم بی سپیڈ سے لیس انٹرنیٹ موجود ہو۔

طلبہ اور طالبات کےلیے الگ الگ انتظام ہو۔

نگرانی کے لیے مندرجہ ذیل چیزوں کا خیال رکھا جائے:

طلبہ کے لیے مرد اور طالبات کے لیے خاتون نگران ہوں

امتحان کے شروع سے آخر تک نگران کی دستیابی

امتحانی اوقات کار کا خیال رکھنا

امتحانات کے دوران نگران کسی بھی کمرہ امتحان میں رہنا لازم ہے

امتحان کے دوران کوئی بھی چیز جو امتحان میں مدد دے سکتی ہو لے جانا منع ہے

طالب علم کے شناختی کارڈ سے اس کی تصدیق ضروری ہے