داخلے اور رجسٹریشن کی شروط اور طریقہ کار:

نئے طالب علم کے بی اے آنرز میں داخلے کےلئے درج ذیل شرطیں جامعہ میں مقرر ہیں:

طالب علم میٹرک یا اسکے مساوی کسی سرکاری یا پرائیوٹ رجسٹرڈ ادارے کا سند یافتہ ہو۔

اگر داخلے کےلئے کوئی امتحان مقرر کیا گیا ہے تو وہ اسکو پاس کرے۔

داخلے کا طریقہ کار:

– طالب علم داخلے اور رجسٹریشن کی شرطوں اور یونیورسٹی میں پڑھائی کے ضوابط اور نظام سے واقف ہو۔

– الیکٹرانک فارم کو پر کرے اور مطلوب اوراق بھی ساتھ لگائے۔

– داخلے کی فیس جمع کرائے جوکہ 50 پچاس ڈالر ناقابل واپسی ہے۔

رجسٹریشن اور پڑھائی کا طریقہ کار:

– طالب علم کےلئے لازمی ہے کہ وہ پہلے سمسٹر کے تمام مضامین میں کمپیوٹرائز رجسٹریشن کروائے۔

– یہ بھی لازمی ہے کہ وہ اپنا ٹائم ٹیبل سمسٹر کے پہلے ہفتے میں لے اور اگر کسی مضمون کو زیادہ یا کم کروانا چاہتا ہے تو اسی ہفتے میں کروالے۔

– ضروری ہے کہ طالب علم تاجیل (سمسٹر فریز) ، عذر، دوبارہ داخلہ،کسی مضمون کو چھوڑنے یا جامعہ کو چھوڑنے کی صورت میں جامعہ کے نظام کی پابندی کرے۔

– ایک سمسٹر کے دوران طالب علم کم از کم 6 پیریڈز اور زیادہ سے زیادہ (21) پیریڈز لے سکتا ہے، اور جامعہ کی کمیٹی سے موافقت کے بعد فراغت کے قریب طالب علم اس سے زیادہ بھی لے سکتا ہے۔

– آن لائن(براہ راست)لیکچرز میں طاب علم کی حاضری 75فیصد سے کم نہیں ہونی چاہئے، اور بغیر کسی عذت کے 25فیصد یا اس سے زیادہ غیر حاضری کی صوت میں اسے اس مضمون کا امتحان دینے کی اجازت نہیں ہوگی اور 50 فیصد غیر حاضری کی صورت میں قطعی عذر بھی قابل قبول نہیں ہوگا۔

– اگر وہ اسکالرشپ طالب علم نہیں ہےتو 25فیصد فیس پہلے تین ہفتوں میں جبکہ باقی 75فیصد پڑھائی شروع ہونے سے دوماہ کے اندر اندر جمع کروائے گا۔

  – اسکالر شپ یا ڈسکاؤنٹ پیکج کو حاصل کرنے کا خواہشمند طالب علم ’’یونیورسٹی کے اسکالرشپ پروگرام اور ڈسکاؤنٹ پیکجز‘‘ سے راہنمائی حاصل کرے۔

 – اسے چاہئے کہ طلبہ کی کارکردگی رپورٹ امتحانات کے طریقہ کار کے بارے جان لے اس موافقت کرے اور طریقہ کار کو لازم پکڑے۔

– امتحانات کے مراکز کی تحدید، طریقہ امتحانات کے بارے یونیورسٹ کے وضع کردہ نظام کو جانے اسکی موافقت کرے اور اسکے مطابق چلے۔

– طالب علم اوپر دیئے گئے نظام کے مطابق اپنے ٹائم ٹیبل میں تبدیلی بھی کر سکتا ہے۔

– طالب علم اگر براہ راست امتحانات میں شرکت نہیں کر سکا تو اپنی واپسی کا مطالبہ کر سکتا ہے،وہ مالی امور کی کمیٹی کو درخواست اسی سمسٹر کے دوران پیش کرے گا۔